امریکا نے پاکستان کی کورونا پالیسی کو شاندار قراردے دیا

امریکا نے پاکستان کی کورونا پالیسی کو شاندار قراردے دیا ۔
کورونا کے بعد دنیا کے معاشی معاملات میں بڑی تبدیلی رونما ہوئی، لیکن پاکستان نے بہتر حکمت عملی سے کورونا وبا کا مقابلہ کیا، امریکی نائب وزیر خارجہ کا بیان۔

تفصیلات

کورونا کے بعد دنیا کے معاشی معاملات میں بڑی تبدیلی رونما ہوئی، لیکن پاکستان نے بہتر حکمت عملی سے کورونا وبا کا مقابلہ کیا، امریکی نائب وزیر خارجہ نے پاکستان کی کرونا پالیسی کو شاندار قرار دیا۔ تفصیلات کے مطابق امریکی نائب وزیر خارجہ وینڈی شرمن نے کہا ہے کہ پاکستان اور امریکا کے کہی دہائیوں سے مضبوط اور بہترین تعلقات قائم ہیں، پاکستان کے تحفظات اور تشویش کا سمجھتے ہیں۔
پاکستان ٹیلی ویژن کو دیے گیے انٹرویو میں گزشتہ روز پاکستان پہنچنے والی امریکی وزیر خارجہ نے اعتراف کیا کہ امریکا کے پاکستان کے ساتھ مضبوط اور دو طرفہ تعلقات قائم ہیں۔ دونوں ممالک ایک دوسرے کا دل سے احترام کرتے ہیں۔امریکی نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ کورونا کے بعد دنیا کے معاشی معاملات میں بڑی تبدیلی رونما ہوئی، لیکن پاکستان نے بہتر حکمت عملی سے کورونا وبا کا مقابلہ کیا۔

وینڈی کا کہنا تھا کہ چین دنیا کی بہت بڑی ابھرتی ہوئی معیشت ہے، ہم کسی کی ترقی میں رکاوٹ بننا نہیں چاہتے بلکہ امریکا افغانستان کی ترقی کا خواہش مند بھی ہے۔انہوں نے کہا کہ ’پاکستان کے تحفظات اور تشویش کو سمجھتے ہیں، پاکستان کئی دہائیوں سے افغان مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے، جس کا سب اعتراف کرتے ہیں‘۔ وینڈی کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان کی بہتری کیلئے پاکستان کے ساتھ مل کر اقدامات کرتے رہیں گے۔


نائب وزیر خارجہ کی آمد کے پیش نظر اسلام آباد ایئرپورٹ پر سیکیورٹی کے سخت اقدامات کیے گئے تھے جبکہ وزارت خانہ کی جانب سے سول ایوی ایشن کو مراسلہ جاری کیا گیا تھا جس میں مہمانوں کی جسمانی تلاشی نہ لینے اور تصاویر نہ بنانے کی ہدایت کی گئی تھی۔خیال رہے اگست میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے رابطے میں امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے پاک امریکا بہتر تعلقات اور مشترکہ مفاد کیلئے تعاون میں دلچسپی کا اظہار کیا تھا۔ترجمان پینٹاگون کا کہنا تھا کہ امریکی وزیر دفاع نے پاک امریکا تعلقات کی اہمیت پر زور دیا اور مشترکہ مقاصد کے حصول کے لیے مل کر کام کرنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے