اٹلی میں مہنگائی کا سالوں پرانا ریکارڈ ٹوٹ گیا

اٹلی میں مہنگائی کا سالوں پرانا ریکارڈ ٹوٹ گیا ۔دنیا بھر میں جاری مہنگائی کی لہر سے اٹلی بھی شدید متاثر ہوا ہے۔ اگست میں جاری کردہ رپورٹ کے مطابق اٹلی میں مہنگائی کا آٹھ سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا ہے۔اگست کے مہینے میں مہنگائی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔اطالوی شماریاتی ادارے کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق دوسری جانب معیشت کی بحالی بھی تیز ہوئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق اٹلی کے سرکاری شماریاتی ادارےISAT نے اگست کی افراط زر کی رپورٹ جاری کی ہے۔ اس رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں جاری مہنگائی کی لہر سے اٹلی بھی مسلسل متاثر ہوا ہے اور افراط زر کی شرح اگست کے مہینے میں 2.1 فیصد رہی جبکہ جولائی میں یہ 1.9 فیصد تھی. اس سے پہلے افراط زر میں یہ اضافہ جنوری 2013 میں ریکارڈ کیا گیا تھا جو کہ 2.2 فیصد تھا۔اس طرح آٹھ سال بعد مہنگائی کی شرح اتنی بڑھی ہے۔

رپورٹ کے مطابق قیمتوں میں سب سے زیادہ اضافہ توانائی کے شعبے میں دیکھنے میں آیا۔تیل بجلی اور گیس کے شعبے میں افراط زر 19.6 فیصد رہا جو کہ پہلے 18.6 فیصد تھا ۔خوراک سمیت عام استعمال کی چیزوں اور گوشت وغیرہ میں اضافہ 0.8 سے 2 فیصد رہا۔

اطالوی ادارے نے معیشت کے حوالے سے رپورٹ جاری کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ اس سال کی دوسری سہ ماہی کے دوران جی ڈی پی میں 2.7 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ گزشتہ برس کے مقابلے میں یہ اضافہ 17 فیصد سے بھی زیادہ ہے۔1995کے بعد یہ پہلا بڑا اضافہ ہے جو کہ اطالوی معیشت کی بحالی کا مضبوط اشارہ ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے