ایلون مسک دنیا کے دوسرے امیر ترین شخص بن گئے۔

ایلون مسک دنیا کے دوسرے امیر ترین شخص بن گئے۔ ٹیکنالوجی کی صنعت سے منسلک ایلون مسک مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس کو پیچھے چھوڑتے ہوئے دنیا کے دوسرے امیر ترین شخص بن گیے ہیں۔

ایلون مسک کی کار کمپنی ٹیسلا کے حصص میں اضافے کے بعد انکی مالیت 7.2 ارب ڈالر سے بڑھ کر 128 بلین ڈالر ہوگئی۔

بلوم برگ بلینیئرز انڈیکس کے مطابق ایمازون کے بانی جیف بیزوس ابھی بھی دنیا کے سب سے امیر ترین شخص ہیں۔

امریکہ میں اہم شیئر انڈیکس میں سے ایک ایس اینڈ پی 500 میں ٹیسلا کے شیئرز شامل کرنے کی خبریں سامنے آنے کے بعد الیکٹرک کار بنانے والی اس کمپنی کے حصص خریدنے کی دوڑ لگ گئی اور اس کی مالیت میں تیزی سے اضافہ ہوا۔

اب کمپنی کی مارکیٹ ویلیو پانچ سو ارب ڈالر سے بھی زیادہ ہو گئی ہے۔

ٹویوٹا، واکس ویگن اور جنرل موٹرز جیسے حریفوں کے مقابلے بہت ہی کم گاڑیاں بنانے کے باوجود بھی ٹیسلا دنیا کی سب سے قیمتی کار کمپنی ہے۔

منگل کے روز جرمنی میں ایک تقریر میں ایلون مسک نے کہا کہ ٹیسلا کی چھوٹی گاڑیوں کے ساتھ یورپ کی بڑی مارکیٹ میں پھیلنے کی بات سمجھ میں آتی ہے کیونکہ یورپ میں لوگ چھوٹی کاریں رکھتے ہیں جبکہ امریکہ میں بڑی کاریں رکھنے کا رواج ہے۔

کئی برسوں کے گھاٹے کے بعد ٹیسلا نے لگاتار پانچ سہ ماہیوں میں منافع دیکھا ہے اور کورونا وائرس کی وبا کے باوجود اس کی کاروں کی اچھی فروخت ہوئی ہے۔
مائیکرو سافٹ کے شریک بانی بل گیٹس برسوں تک دنیا کے سب سے امیر ترین شخص تھے لیکن 2017 میں جیف بیزوس نے ان کی جگہ لے لی تھی۔

بل گیٹس کی مارکیٹ ویلیو 127.7 ارب ڈالر ہے لیکن اگر انھوں نے کئی دہائیوں میں بڑی رقم خیرات اور عطیہ نہ کی ہوتی تو ان کی مالیت اس سے بھی زیادہ ہوتی۔

جیف بیزوس کی مجموعی مالیت کا تخمینہ بلومبرگ کے مطابق 2 .182ارب ڈالر ہے۔ اس سال کورونا وائرس کے دوران ایمازون کی مانگ بڑھتے ہی ان کی مالیت میں اضافہ ہو گیا۔

ایلون مسک اکثر تنازعات کی زد میں رہتے ہیں اور پچھلے کچھ ہفتوں میں بھی خبروں میں رہے۔ گذشتہ ہفتے ہفتے انھوں نے ٹویٹ کی کہ غالباً انھیں کوڈ 19 ہے اور ان میں سردی کی معمولی علامات ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے