بریگزٹ ختم،برطانیہ اور یورپی یونین کے درمیان سفر آسان ہوگیا

بریگزٹ ختم،برطانیہ اور یورپی یونین کے درمیان سفر آسان ہوگیا ۔بریگزٹ کے بعد برطانیہ اور یورپی یونین کے درمیان سفر کرنے والے افراد کی ایک بڑی مشکل آسان ہوگئ ہے۔ یورپی یونین نے برطانیہ اور یورپی یونین کے درمیان سفر کرنے والے افراد کے لیے خصوصی رعایت کی اجازت دے دی۔

تفصیلات

یکم جولائی سے بریگزٹ کے بعد یورپی یونین اور برطانیہ کے درمیان اپنی گاڑی میں سفر کرنے والے افراد کے لیے بہت سی مشکلات شروع ہو گئی تھیں۔ جن کی وجہ نئے رولز کا نفاذ تھا۔ان رولز کی وجہ سے برطانیہ اور یورپی یونین کے درمیان سفر کرنے والوں کے لیے سفر زیادہ خرچے اور درد سر کا باعث بن گیا تھا۔

ڈرائیوروں کو یورپی یونین کی حدود میں آنے سے پہلے اپنی گاڑی کی انشورنس کروانی پڑتی تھی جس پر اضافی خرچہ ہوتا تھا اور وقت بھی ضائع ہوتا۔ اس اصول سے خصوصابرطانوی آئرلینڈ اور آئرلینڈ کے درمیان سفر میں مشکل کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔

اب یورپی یونین نے مسافروں کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے اس شرط کو ختم کرنے کی منظوری دے دی ہے۔یورپی کمیشن کا کہنا ہے کہ ان قواعد کا آغاز یورپی قواعد کے جرنل میں ان کی اشاعت کے بیس روز کے بعد ہوگا۔ اور توقع ہے کہ چند روز میں یہ منظوری سرکاری جرنل میں شائع ہو جائے گی۔

توقع ہے کہ اس ماہ کے آخریا اگست کے آغاز میں برطانوی ڈرائیوروں کو یہ سہولت مل جائے گی۔جس کے بعد جرمنی ،فرانس ،اسپین اور دیگر یورپی ممالک میں اپنے گاڑی پر جانے کی راہ مزید ہموار ہو جائے گی۔ایسوسی ایشن آف برٹش انشورر نے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ڈائریکٹرجنرل کا کہنا ہے کہ یورپی یونین کا فیصلہ مستحسن ہے۔اس فیصلے پر عمل درآمد کے بعد برطانوی ڈرائیوروں کو یورپی یونین سفر کرنے کے لئے اپنے انشورنس کمپنیوں سے گرین کارڈ لینے کی ضرورت نہیں رہے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے