تارکین اور بے گھر افراد کی مشکل حل،حکومت قانونی مدد فراہم کرے گی

تارکین اور بے گھر افراد کی مشکل حل،حکومت قانونی مدد فراہم کرے گی ۔بے گھر افراد کیلئے قانونی مدد بذریعہ وکیل فری پروگرام جس کا نام ایک گلی ایک وکیل ہے۔

یہ پروگرام کسی بھی دوسرے قانونی امداد کے پروگرام سے مختلف ہے۔اس پروگرام میں ہیومن رائٹس360کی جانب سے مکمل شراکت داری کے ساتھ یہ پروگرام شروع کیا گیا ہے۔

پروگرام کی تفصیلات

سڑک پر رہنے والے لوگوں کیلئے ہے ۔جنکے پاس رہنے کیلئےکوئی اپنا گھر نہیں ہوتا۔اور وہ لوگ معاشی بدحالی اور گھر کے نہ ہونے کی وجہ سے نفسیاتی مسائل کا شکار ہوتے ہوئے مذید مسائل کا شکار ہ جاتے ہیں ۔

تارکین اور بے گھر افراد کی مشکل حل،حکومت قانونی مدد فراہم کرے گی ۔اس پروگرام کا مقصد بے گھرافرادکوقانونی مدد فراہم کرنا ہے۔
فلاحی ریاستوں کے قیام کا مقصد معاشرے کی کمزوریوں کی تلافی کیلئے اقدامات اٹھانا ہوتا ہے۔تاہم بہت سے سماجی ،پسماندہ لوگ مختلف وجوہات کی بنا پر ان فوائد سے آگاہ نہیں ہو سکتے۔

ایسی صورت حال میں نظام کی بہتری ،موبائل آپریشن کے ساتھ کرنا پڑتی ہے۔تاکہ بحران کے شکار افراد تک پہنچ کر انکی مدد کی جا سکے۔

کاروئی کا مقصد سڑک پر لوگوں کے قانونی مسائل اور زیر التواء مسائل کی چھان بین کرنا ہے۔اور اس بات کی تحقیقات کرنا ہے کہ کس طرح قانونی دائرہ میں رہتے ہوئے انکی مدد کرنا ہے۔اور ان باتوں کا بھی کھوج لگانا ضروری ہوتا ہے کہ نام نہاد انصاف ،پولیس،انتظامی بیوروکریسی کی کن کن غفلتوں کی وجہ سے ان افراد کو انکے حقوق نہ مل سکے۔

پروگرام کا ہدف

حکام نے کہا کہ ہمارا اس پروگرام کا ہدف یہ ہے کہ بااختیار ادروں کے ساتھ مل کر اگر قانون سازی میں تبدیلیاں بھی کرنی پڑیں ۔تو انسانی حقوق کے تحفظ کیلئے نئے قوانین بنائے جا سکیں ۔

تاکہ بے گھر لوگوں کی زندگی کو حقوق کے ساتھ سنوارا جا سکے۔ پروگرام میں وضاحت کرتے ہوئے یہ بھی بتایا کہ کاتیرینا پورنا نامی وکیل جو ہفتے میں تین بار ایتھنز شہر کی سڑکوں پر اپنی ٹیم کے ساتھ گھومتی ہیں ۔اور ان بے گھر لوگوں کی مدد کی جاتی ہے۔جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ عام طور پر وکیل صرف اپنے دفاتر میں ہی بیٹھتے ہیں ۔لیکن اس پروگرام میں گلی اور سڑک پر پہنچ کر ان بے گھر افراد کی مدد کی جاتی ہے۔

فلاحی تنظیم اور انسانی حقوق کے اداروں نے اس پروگرام کا خیر مقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ اس سے بے گھر افراد کو اپنے حقوق حاصل کرنے میں آسانی ہوگی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے