جرمن شہروں میں حد رفتار محدودکرنے کی تحریک

جرمن شہروں میں حد رفتار محدودکرنے کی تحریک شروع کی گئی ہے۔ جرمنی میں موٹر ویز پر اسپیڈ کو کنٹرول کرنے کی بحث زور پکڑتی جا رہی ہے۔ یہ امر اہم ہے کہ جرمن موٹر ویز پر موٹر کاروں کے لیے اسپیڈ کی حد مقرر نہیں۔ شہروں میں اسپیڈ کی حد مقرر کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔

تفصیلات

جرمنی میں موٹر ویز پر حد رفتار مقرر کرنے کے حوالے سے ابھی تک موجودہ یا کسی سابقہ حکومت نے ہمت کا مظاہرہ نہیں کیا ہے۔ دوسری جانب یورپی شہروں کی بڑی شاہراہوں یا ہائی ویز پر حد رفتار ایک سو بیس یا ایک سو تیس کلو میٹر فی گھنٹہ مقرر کی جا چکی ہے۔ دوسرے یورپی شہروں کی طرح جرمنی میں بھی کاروں کی حد رفتار کے قوانین سخت کیے جا رہے ہیں۔ اسپین میں حال ہی میں شہروں کے اندر کاروں کی اسپیڈ تیس کلومیٹر فی گھنٹہ رکھنے کے قانون کا نفاذ ہو گیا ہے۔

الیکشن اور حد رفتار کی بحث
جرمنی میں رواں برس ستمبر میں عام پارلیمانی انتخابات ہو رہے ہیں۔ انتخابی عمل میں امیدواروں کی مہم تیز سے تیز تر ہو رہی ہے۔ اس میں بھی کار اسپیڈ کا معاملہ شدت کے ساتھ گردش کر رہا ہے۔ ماحول دوستوں کا کہنا ہے کہ موٹر ویز پر حد رفتار مقرر کرنے سے ایک سو ملین میٹر ٹن تک ماحول کو نقصان پہنچانے والی کاربن ڈائی آکسائیڈ گیس کا اخراج کم ہو گا۔

اس مناسبت سے جرمنی کے سب سے گنجان آباد صوبے نارتھ رائن ویسٹ فیلیا میں ایک ماحول دوست تنظیم آلائنس آف انوائرمنٹل ایسوسی ایشنز بہت زیادہ سرگرم ہے۔ ایک اور پیش رفت یہ ہے کہ جرمنی کے سب سے بڑے آٹوموبیل کلب اے ڈی اے سی (ADAC) میں بھی اب موٹر ویز پر حد رفتار مقرر کرنے کے مخالفین کی تعداد اکثریت میں نہیں رہی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے