سویڈن نے امیگریشن ویزا کے قوانین میں تبدیلی کر دی

سویڈن نے امیگریشن ویزا کے قوانین میں تبدیلی کر دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ سویڈن نے امیگریشن ویزہ کے حصول کے نئے قوانین 2021 کیے ہیں جن میں دو تبدیلیاں متعارف کروائی گئی ہیں جن کے مطابق عارضی رہائش کے لیے اپلائی کی گیا ویزہ بنیادی ترجیح ہوگا۔جبکہ وہ افراد جو سویڈن میں مقیم اپنے رشتے داروں سے ملنا چاہتے ہیں ان کے لیے ویزا ریکوائرمنٹ میں اضافہ کیا گیا ہے۔

عارضی رہائش کے لیے ویزا درج ذیل تین شرائط پر دیا جائے گا۔

1.عارضی رہائش کے قوانین کے مطابق ان لوگوں کو خصوصی ترجیح حاصل ہوگی جو الائنس ایکٹ کے تحت پناہ حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

2.رہائش صرف اس صورت میں دی جائے گی جب ویزے کے لیے اپلائی کرنے والے افراد کو عارضی سے پر رہائش اختیار کیے ہوئے تین سال سے زیادہ عرصہ گزر چکا ہو اس صورت میں مزید یہ شرائط عائد کی گئی ہیں کہ سوئیڈش زبان پر مہارت اور معاشرتی اصولوں کی پیروی کی جائے۔

3.مزید برآں الائنس کے قانون سے دوسرے افراد کی پناہ کے لیے دی گئی درخواست کے قوانین کی شق کو خارج کر دیا گیا ہے۔

4.رشتےداری کے تحت امیگریشن ویزا حاصل کرنے کے قانون میں بی تبدیلی کی گئی ہے ہے جس کے مطابق رشتے داروں کے لیے ویزا کی درخواست صرف وہ افراد دے سکتے ہیں جنہیں مستقل رہائش حاصل ہو اور مزید برآں وہ اپنے اور اپنے رشتے دار کی رہائشی ضروریات اور رہن سہن کے معاملات بھی خوش اسلوبی سے سر انجام دے سکیں۔

5.انسانی ہمدردی کے قوانین کے تحت بھی امیگریشن ویزا حاصل کیا جا سکتا ہے۔ مثلا بچے کے والدین کے پاس رہائش وغیرہ ۔

تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ امیگریشن کے قوانین میں مزید نرمی کا بھی امکان ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے