سپین کے رہنے والوں کے لیے خوشخبری، حکومت نے تنخواہ بڑھا دی

سپین کے رہنے والوں کے لیے خوشخبری، حکومت نے تنخواہ بڑھا دی ۔اسپین کے رہائشی افراد کے لیے حکومت نے خوش خبری سنا دی۔عالمی سطح پر جاری مہنگائی کی شدید لہر کے بعد حکومت نے اسپین کے رہائشی افراد کا دیرینہ مطالبہ منظور کرلیا ہے۔

تفصیلات

اسپین کے شہر میڈرڈ میں جاری مذاکرات کے بعد حکومت اور یونین کے درمیان معاہدہ طے پا گیا ہے۔ جس کے مطابق ملک میں کم از کم تنخواہ میں اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اگلے دو برسوں میں تنخواہ کہاں تک بڑھائی جائے گی اس حوالے سے بھی حکومت نے عندیہ دے دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق کرونا وبا کے بعد دنیا میں جاری مہنگائی کی شدید لہر سے یورپی خوشحال ممالک بھی متاثر ہوئے ہیں ۔ایسے میں محتلف ممالک میں تنخواہ میں اضافے کے لئے مطالبات اور احتجاج سامنے آئے ہیں۔تاہم اسپین میں حکومت نے مزدوروں کی یونین کے ساتھ کم از کم تنخواہ میں اضافے کے معاہدے پر اتفاق کرلیا ہے۔

اس معاہدے کا اطلاق یکم ستمبرسے کردیاگیاہے۔یعنی اگلے ماہ لوگوں کو جو تنخواہ دی جائے گی اس میں اضافہ شامل ہوگا۔معاہدے کے مطابق کم از کم تنخواہ 965 یورو ماہانہ مقرر کی گئی ہے۔جو اس سے پہلے 950یورو تھی۔اس طرح کم از کم تنخواہ میں 15 یورو ماہانہ کا اضافہ کیا گیا ہے۔ اسپین میں اس وقت مہنگائی کی شرح تین فیصد سے تجاوز کر چکی ہے۔اس لحاظ سے یہ اضافہ کم ہے۔تاہم اس اعلان سے کم تنخواہ والے افراد کو کچھ نہ کچھ سہارا ضرور ملے گا۔اگرچہ حکومت اور مزدوروں کی یونین کے درمیان یہ معاہدہ طے پا گیا ہے تاہم مزدوروں کی یونین کا اب بھی یہ مطالبہ تھا کہ حکومت اگلے دو سالوں میں تنخواہ میں کیے جانے والے اضافے کا بھی تعین کرے۔

اس حوالے سے ورکر کمیشن کے سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ 2022 میں کم ازکم تنخواہیں ایک ہزار یورو مقرر کی جائے۔اور اسی طرح 2023 میں کیے جانے والے اضافے کے حوالے سے بھی پیشرفت ہونی چاہیے۔ اس حوالے سے ہسپانوی حکام کا کہنا ہے کہ ستمبر میں کیا جانے والا اضافہ 2023 میں کیے جانے والے اضافے کی طرف ہی پیش رفت ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے