شمالی امریکا شدید گرمی اور جنگلات کی آگ کی لپیٹ میں

شمالی امریکا شدید گرمی اور جنگلات کی آگ کی لپیٹ میں ہے ۔شمالی امریکا کے خطوں میں حکام نے ایک بار پھر سے سخت گرمی کی لہر کے تئیں خبردار کیا ہے۔ شدید درجہ حرارت کے سبب متعدد شہروں میں انخلا، راستوں کی بندش اور ریل کی آمد و رفت کو محدود کرنے کے احکامات دینے پڑے ہیں۔

امریکا اور کینیڈا جیسے ممالک میں گیارہ جولائی اتوار کے روز عوام کو بڑھتے ہوئے درجہ حرارت کی وجہ سے شدید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ گرمی کی شدید لہر کے سبب حکام کو بعض علاقوں سے انخلا کروانا پڑا جبکہ کچھ علاقوں میں سڑکوں کی بندش اور ٹرین سروسز کو بھی محدود کرنا پڑا۔

امریکی محکمہ موسمیات نے اپنی ویب سائٹ پر اعلان کیا ہے کہ گرمی کی، ”ایک خطرناک لہر مغربی امریکا کے بیشتر علاقوں کو متاثر کر سکتی ہے اور اس کی وجہ سے ریکارڈ توڑ درجہ حرارت کا امکان ہے۔” اس میں فینکس اور سان جوز جیسے شہروں میں بھی شدید گرمی کے لیے متنبہ کیا گیا ہے۔

جون کے بعد گرمی کی دوسری لہر
امریکا اور کینیڈا کے بعض علاقوں میں چند ہفتے قبل بھی شدید گرمی پڑی تھی جس میں درجنوں افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ ماحولیات پر نظر رکھنے والے یورپی یونین کے ایک ادارے کے مطابق شمالی امریکا میں گزشتہ جون اب تک کا سب سے گرم مہینہ تھا۔

شدید گرمی کی وجہ سے جنگلوں میں آگ بھی لگ گئی تھی جس کی وجہ سے جنگل کے کافی بڑے علاقے تباہ ہو گئے۔ جنگلوں میں آگ کی وجہ سے مختلف علاقوں کے لوگوں کو مجبوراً اپنی رہائش گاہوں سے انخلا کرنا پڑا۔ امریکی ریاست کیلیفورنیا کے ڈیتھ ویلی علاقے میں سب سے زیادہ درجہ حرارت درج کیا جاتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے