یورپی ممالک میں مہاجرین کی نئی بڑی لہر آنے کا امکان

یورپی ممالک میں مہاجرین کی نئی بڑی لہر آنے کا امکان ظاہر کر دیا گیا۔یورپی ماہرین نے یورپ میں مہاجرین کی نئی بڑی لہر آنے کا امکان ظاہر کر دیا ہے ۔ ماہرین نے حکام کو خبردار کیا ہے کہ مہاجرین کو روکنے کے لیے ابھی سے اقدامات شروع کیے جائیں اور تمام ممالک کو الرٹ کر دیا جائے۔۔

تفصیلات

آسٹریا کے چانسلر نے یورپی یونین کو کو خبردار کیا ہے کہ افغانستان سے نیٹو افواج کے انخلاء کے بعد مہاجرین کی بڑی لہر کے یورپ آنے کا امکان ہے۔انہوں نے کہا کہ اس کے آثار پہلے سے ہی واضح ہیں اور افغانستان کے ماہرین کی بڑی تعداد ایران سے ترکی منتقل ہورہی ہے۔انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا افغان مہاجرین کو ڈی پورٹ کرنے کا عمل جاری رکھے گا۔

یورپی یونین کے لیے بہترین آپشن یہ ہے کہ ہم افغانستان میں بہتر حالات پیدا کریں۔نہ کہ مہاجرین کے لیے دروازے کھولے جائیں۔انہوں نے مزید کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ 2015 مہاجرین بحران کے بعد یورپی یونین اور جرمنی نے اپنی پالیسی تبدیل کی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے