یورپی یونین نے تارکینِ وطن کے لیے بڑے بجٹ کی منظوری دے دی۔

یورپی یونین نے تارکینِ وطن کے لیے بڑے بجٹ کی منظوری دے دی ہے۔یہ بجٹ تارکین وطن کے فائدے اور سرحدوں پر استعمال کیا جائے گا۔

تفصیلات

تفصیلات کے مطابق یورپی یونین نے اگلے چھ برس یعنی 2027 تک کے لیے تارکین وطن کو دیے جانے والے فوائد کی مد میں بڑے بجٹ کی منظوری دی ہے۔اس حوالے سے 16 ارب یورو مختص کیے گئے ہیں۔یہ بجٹ تارکین وطن کے مسائل کے حل کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

بجٹ کا بڑا حصہ تقریبا10 ارب یورو کے قریب یورپ میں سیاسی پناہ اور امیگریشن کے قوانین بہتر بنانے کے لئے استعمال کیا جائے گا۔سیاسی پناہ کے لیے مشترکہ پالیسی بنائی جائے گی قانونی امیگریشن کو بڑھایا جائے گا۔اور اس کے لئے رکن ممالک کی ضروریات کو مد نظر رکھا جائے گا۔

اس کے علاوہ تارکین اور یورپی ممالک میں ہم آہنگی کو فروغ دینے کے لیے بھی اقدامات کیے جائیں گے۔غیر قانونی امیگریشن کی حوصلہ شکنی کی جائے گی۔تارکین وطن کو سیٹلمنٹ میں مدد فراہم کی جائے گی۔اس فنڈ کے ذریعے سے یورپ میں پناہ حاصل کرنے والے تارکین کی ذمہ داریاں رکن ممالک میں تقسیم کی جائیں گی۔فنڈ کی تقسیم رکن ممالک میں خصوصی فارمولےکے تحت ہو گی جس میں یہ دیکھا جائے گا کہ کسی ملک میں کتنے تارکین وطن ہیں کتنی تعداد میں سیاسی پناہ کے لیے درخواست دی گئی ہیں۔اور کتنے لوگ ڈیپورٹ ہوئے ہیں ان تمام چیزوں کو دیکھتے ہوئے فنڈ فراہم کیے جائیں گے۔

سرحدوں کا کنٹرول

سرحدوں کا کنٹرول بہتر بنانے کے لیے تقریبا 6 ارب 24کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔ جس کی بدولت تارکین کا یورپ میں داخلہ مزید مشکل ہو سکتا ہے۔تاہم یورپی ممالک کے اراکین کا کہنا ہے کہ سرحدوں کا کنٹرول بہتر بنانے کے ساتھ بنیادی حقوق کو بھی مدنظر رکھا جائے گا،بالخصوص کم عمر تار کین اور وہ افراد جنہیں مدد کی ضرورت ہو گی ان کے ساتھ نرمی اختیار کی جائے گی۔اس طرح ویزاپالیسی کو بھی بہتر بنایا جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے