یورپ میں داخلہ آسان،اہم ملک نے ویزا فری انٹری دینے کا اعلان کردیا

یورپ میں داخلہ آسان،اہم ملک نے ویزا فری انٹری دینے کا اعلان کردیا ۔اب پاکستانیوں کے لیے یورپ میں داخلہ آسان ہوگیا اہم ملک نے پاکستانیوں کو ویزا فری انٹری دینے کا اعلان کر دیا ہے۔ یورپی ممالک سےاختلافات کے بعد بیلاروس کے صدر تارکین وطن کو یورپ کی طرف دھکیلنے کی پالیسی پر عمل پیراہیں اس حوالے سے انہوں نے بہت سے ممالک کے افراد کو اپنے ملک میں ویزا فری انٹری دی ہے۔ اب اس لسٹ میں پاکستان کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

تفصیلات

تفصیلات کے مطابق یورپی ممالک سے اختلافات کے بعد بیلاروس کے صدر نے اپنے ملک کے تارکین کو یورپی ممالک پولینڈ،لٹویا اور لتھوانیا کی سرحد تک جانے کی کھلی اجازت دے رکھی ہے۔اور اب وہ مزید تارکین وطن کو یورپی ممالک کی سرحد تک جانے کی راہ دکھا رہے ہیں۔

بیلاروس کی اس پالیسی پر یورپی ممالک تشویش کا اظہار کر رہے ہیں جن میں جرمنی سرفہرست ہے کیونکہ اس پالیسی کے تحت آنے والے تمام تارکین وطن زیادہ تر جرمنی کا ہی رخ کرتے ہیں۔بیلاروس کی اس پالیسی کی بدولت یورپی ممالک اور جرمنی نے اسےانسانی اسمگلر کا خطاب دیا ہے۔تاہم اس محالفت کے باوجود بیلاروس کے صدر اپنی پالیسی پر قائم ہیں۔اور انہوں نے زیادہ سے زیادہ تارکین وطن کو یورپی ممالک کی سرحد تک پہنچانے کے لئے بہت سے ممالک کو ویزا فری انٹری دینے کا اعلان کر دیا ہے۔اب اس فہرست میں پاکستان کا نام بھی شامل کر لیا گیا ہے۔یعنی اب پاکستانی ویزا کے بغیر بیلاروس جا سکیں گے۔

شرائط

تاہم بیلاروس کی اس پالیسی سے صرف وہی پاکستانی فائدہ اٹھا سکتے ہیں جنہوں نے پہلے کسی یورپی ملک کا سفر کیا ہو یا جن کے پاسپورٹ پر کسی یورپین شینگین ملک کا ویزا ہو۔بیلاروس نے 76 ممالک کو ویزا فری انٹری دینے کا اعلان کیا ہے۔

ان ممالک میں پاکستان کے علاوہ بھارت، ایران، سعودیہ، مصر، عمان اور بحرین شامل ہیں۔ان ممالک کے شہری بیلاروس میں ویزا کے بغیر انٹری اور 30 دن قیام کر سکیں گے۔ویزا فری انٹری پر پاکستان اور دیگر 75 ممالک سے بیلاروس جانے والے افراد کو ٹکٹ کے علاوہ 10 ہزار یورو کی میڈیکل انشورنس اور قیام کا خرچہ ساتھ دینا ہوگا۔ان افراد کو بیلاروس پہنچنے پر ایئرپورٹ پر ویزا جاری کیا جائے گا۔

بیلا روس میں پاکستان کے سفیر سجاد حیدر خان نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ بیلاروس نے 17 اکتوبر سے پاکستانیوں کو ویزہ فری انٹری دینے کا آغاز کردیا ہے۔تاہم انہوں نے بتایا کہ یہ سہولت ان پاکستانیوں کو ملے گی جن کے پاسپورٹ پر پہلے سے شینگین یورپی ویزہ لگا ہوں یا وہ پہلے کسی یورپی ملک کا سفر کر چکے ہوں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے